اسلام آبادہائی کورٹ نے شہباز گل کے مزید دو روزہ جسمانی ریمانڈ درخواست کی منظوری کر لی۔ایڈیشنل سیشن جج زیبا چوہدری نے پولیس کی درخواست پر فیصلہ سنایا۔ عدالت کے فیصلے پی ٹی آئی کےرہنما شہباز گل کو دوبارہ دو دن کے لیے جسمانی ریمانڈ پر اسلام آبادپولیس کے حوالے کر دیاگیا۔عدالت نے ریمارکس دیے کہ ابھی شہباز گل سے تفتیش مکمل نہیں ہوئی اس لیےسے کیس کی تفتیش مکمل کرنے کے لیے پی ٹی آئی رہنما شہباز گل کو 48 گھنٹوں کے لیے شہباز گل کو پولیس کے حوالے کیا جائے۔

عدالت کےتحریری حکم نامے میں کہا گیا کہ تفتیشی افسر شہباز گل کوحراست میں لینے کے بعدانکا فوری طبی معائنہ کرائے اور طبی معائنہ کی رپورٹس جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے جمع کرائی جائے،شہباز گل کا دو روز کاجسمانی ریمانڈ منظور کیا جاتا ہے۔پی ٹی آئی رہنما کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست مسترد ہونے کے خلاف نظرثانی درخواست پر سماعت ہوئی، اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر راجہ رضوان عباسی جبکہ شہباز گل کے وکلاء سلمان صفدر اور فیصل چوہدری عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔

پولیس کے تفتیشی افسر نے ریکارڈ عدالت کے سامنے پیش کیا جس کے بعد دلائل کا آغاز ہوا۔ دوران دلائل ‏پی ٹی آئی رہنماشہباز گل کے وکیل سلمان صفدر نے جنرل مرزا اسلم بیگ اور ایئر چیف مارشل اصغر خان کیس کا حوالہ دیا۔ یادرہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایڈیشنل سیشن جج کو جسمانی ریمانڈ کی پولیس نظرثانی درخواست دوبارہ سن کر فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں