تین ایسے گناہ ہیں جس کی سزا دنیا میں ہی ملے گی اور آخرت میں بھی اس کا سخت ترین حساب ہوتا ہے ۔ان تینوں میں سے پہلا گناہ ہے

ماں باپ کو تکلیف پہنچانا ۔جو انسان اپنے ماں باپ کو تکلیف دیتا ہے تو اسی کی اولاد ہی اس کو تکلیف دے گی ۔یوم وہ دنیا اور آخرت میں رسوا ہو گا ۔کیونکہ مکافات عمل سے دنیا میں ہوتا ہے۔دوسرا گناہ لوگوں پر ظلم کرنا ہے لوگوں کے ساتھ زیادتی کرنا ہے ۔جو انسان اللہ کی مخلوق پر ظلم کرتا ہے

،اللہ اسے معاف نہیں کرتا جب تک کہ مخلوق معاف نہ کر دے ۔ لوگوں کے دلوں سے اس انسان کی عزت ختم ہو جاتی ہے ۔تیسرا ہونا یہ ہے کہ دوسروں کی نیکی اور اچھائی کی قدر نہ کرنا ۔جو انسان یہ گناہ کرتا ہے۔تو آنے والے وقت میں اسانسان کی بھی نیکی اور اچھائی کی کوئی قدر نہیں کرتا ۔ہمیں چاہیے کہ ہم اپنی زندگی صحیح طریقے سے گزارے۔اپنے آپ میں سدھار پیدا کریں اور لوگوں کی مشکلیں آسان کریں ۔اگر ہم اللہ کی مخلوق کے ساتھ اچھا کریں گےتو اللہ بھی ہمارے لئے آسانیاں پیدا کرے گا اور ہماری زندگی میں سکون عطا فرمائے گا ۔اسی لئے سب کے ساتھ اچھا رویہ رکھو اور گناہوں سے جتنا ہوسکے بچو۔اسی میں ہماری بھلائی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں