یہ واقعہ نائیجیریا کے صوبہ زمفرا اور کاڈونا کے بارڈر پر پیش آیا ہے۔ نائیجیرین ایئرفورس کے مطابق ایک ایلفا جیٹ طیارہ اغوا کاروں اور ڈاکوؤں کے خلاف کامیاب فضائی حملہ کرکے واپس لوٹ رہا تھا کہ اس پر شدید فائرنگ کی گئی۔ جنگی جہاز کے پائلٹ ابایومی ڈائرو نے خطرے کے پیش نظر خود کو طیارے سے باہر اچھالا اور زمین پر اترنے کے بعد ایک گھر میں پناہ لی ہے۔

مبینہ طور پر اس کا ذمے دار علاقے میں موجود مسلح جرائم پیشہ گروہوں کو ٹھہرایا گیا ہے جسے مقامی لوگ ’ڈاکو‘ کے نام سے پکارتے ہیں۔ یہ گروہ بڑی تعداد میں لوگوں کو اغوا کرتا ہے۔

گزشتہ سال دسمبر سے اب تک اس علاقے صوبہ زمفرا اور کاڈونا کے بارڈر سے ایک ہزار سے زائد افراد اغوا ہوچکے ہیں جن میں اکثریت بچوں کی ہے۔ اگرچہ ان میں سے کئی بچوں کوچھڑا لیا گیا ہے لیکن ان سب کو تاوان دے کر رہا کروایا گیا۔ اس کے بعد حکومت نے ان ڈاکوؤں کی سرکوبی کے لیے ملکی فضائیہ کو خصوصی حکم دیا جس کے بعد ان کے ٹھکانوں پر بمباری جاری ہے۔

اس کے بعد فضائیہ کے کسی جنگی جہاز کو تباہ کرنے کا یہ پہلا واقعہ بھی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں