مائیکروسافٹ گزشتہ دن اپنے جدید ترین ’’ونڈوز 365‘‘ آپریٹنگ سسٹم کا اعلان کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اسے 2 اگست 2021 کو جاری کیا جائے گا تاہم شروع شروع میں یہ صرف تجارتی و کا روباری اداروں کےلیے ہوگا۔خبروں کے مطابق، نیا ’’ونڈوز 365‘‘آپریٹنگ سسٹم ’’کلاؤڈ کمپیوٹنگ سروس‘‘ استعمال کرے گا۔ یعنی یہ آپریٹنگ سسٹم صارفین کے کمپیوٹر پر نہیں بلکہ ایک آن لائن کمپیوٹر (کلاؤڈ سرور) پر انسٹال ہوگا۔

یہی نہیں بلکہ ونڈوز 365 پر چلنے والے تمام یوٹیلیٹی سافٹ ویئر بھی اسی (کلاؤڈ سرور) پر انسٹال کیے جائیں گے۔
اس کا ایک اور مطلب یہ بھی ہوا کہ ونڈوز 365 استعمال کرنے کےلیے کم جنریشن والا کمپیوٹر، ٹیبلٹ یا اسمارٹ فون بھی کافی رہے گا۔ البتہ ہر صورت میں مستقل انٹرنیٹ کنکشن لازمی درکار ہوگا۔

جبکہ، ونڈوز 365 تک رسائی کےلیے صارفین کو ایک عدد ’’براؤزر‘‘ یا اپلیکیشن کی ضرورت ہوگی۔واضح رہے کہ مائیکروسافٹ کارپوریشن نے پہلے ہی ’’آفس 365‘‘ اور ایکس باکس اسٹریمنگ کو اپنے ’’ازور کلاؤڈ‘‘ پر منتقل کرچکا ہے۔ ونڈوز 365 اسی کڑی کا اگلا اہم ترین قدم قرار دیا جارہا ہے۔گزشتہ روز ’’مائیکروسافٹ اگنٹ‘‘ کانفرنس میں ونڈوز 365 کے اعلان میں مائیکروسافٹ کمپنی نے یہ نہیں بتایا کہ اس نئے آپریٹنگ سسٹم کی ماہانہ، سہ ماہی، ششماہی یا سالانہ سبسکرپشن فیس کتنی ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں